1. السلام علیکم
    آئی ٹی استاد ڈاٹ کام وزٹ کرنے کا شکریہ۔ ہم آپکو خوش آمدید کہتے ہیں۔ فورم کے کسی بھی حصے کو استعمال میں لانے جیسے پوسٹنگ کرنے، کوئی تھریڈ دیکھنے یا لکھنے کسی بھی ممبر سے رابطہ کرنے کے لئے اور فورم کے دیگر آلات وغیرہ کا استعمال کرنے کے لئے آپکا رجسٹر ہونا ضروری ہے۔ رجسٹر ہونے کے لئے یہاں کلک کریں۔ رجسٹریشن حاصل کرنا بالکل آسان اور بالکل مفت ہے۔
  2. آئی ٹی استاد کے لیے ٹیم ممبرز کی ضرورت ہے خواہش مند ممبرز ایڈمن سے رابطہ کریں
    Dismiss Notice

جس سمت بھی دیکوں نظر آتا ھے کے تم ھو

Discussion in 'Poetry' started by ujala, Aug 23, 2016.

Share This Page

  1. ujala
    Offline

    ujala Newbi
    • 1/8

    جس سمت بھی دیکوں نظر آتا ھے کے تم ھو
    اے جان ے جہاں یہ کوئی تم سا ھے کے تم ھو

    اس دید کی چاھت میں کئی رنگ ھیں لرزاں
    میں ھوں کوئی اور ھے دنیا ھے کے تم ھو

    یہ خواب ھے خوشبو ھے جھونکا ھے کے پل ھے
    یہ دھند ھے بادل ھے سایہ ھے کے تم ھو

    دیکھو یہ کسی اور کی آنکھیں ھے کے میری
    دیکھوں یہ کسی اور کا چہرہ ھے کے تم ھو

    یہ عمر ے گریزاں کہیں ٹھرے تو یہ جانوں
    ھر سانس میں مجھ کو یہ لگتا ھے کے تم ھو

    ھر بزم میں موضوع ے سخن دل زدگاں کا
    اب کون ھے شیریں ھے کے لیلی ھے کے تم ھو

    اک درد کا پھیلا ھوا صحرا ے کے میں ھو
    اک موج میں آیا ھوا دریا ھے کے تم ھو

    وہ وقت نہ آئے کے دل ے زار بھی سوچے
    اس شہر میں کوئی تنہا ھم سا ھے کے تم ھو

    آباد ھم آشفتہ سروں سے نہیں مقتل
    یہ رسم ابھی شہر میں زندہ ھے کے تم ھو

    اے جان ے فراز اتنی بھی توفیق کسے تھی
    ھم کو غم ے ہستی بھی گوارہ ھے کے تم ھو

     

Share This Page